Tuzk e Babari | Book Corner Showroom Jhelum Online Books Pakistan

TUZK E BABARI تزک بابری

<span dir='ltr' class='left text-left'>TUZK E BABARI</span> <span dir='rtl' class='right text-right'>تزک بابری</span>

تزکِ بابری پڑھتے جائیے!!! حیران و پریشان ہوتے جائیے!!!

تزکِ بابری میں لکھا ہے کہ بابر جب ہندوستان کی فتح کے ارادے سے نکلا تو اُس نے موجودہ پاکستان میں ”واہ“ کے مقام پر پڑاؤ ڈالا۔ رات کے وقت اُس کے سپاہی ایک اجنبی شخص کو پکڑ لائے۔ سپاہیوں کا خیال تھا کہ یہ شخص جاسوس ہے۔ بابر نے اُس سے پوچھا کہ تم جانتے ہو میں کون ہوں؟ اُس شخص نے لاعلمی کا اظہار کیا تو بابر نے اُسے بتایا کہ میں بادشاہ ہوں اور تمہارے ملک پر قبضہ کرنے آیا ہوں۔ اس پر اُس شخص نے ہاتھ جوڑ کر کہا کہ حضور شوق سے قبضہ کریں، صرف میرے کھیت اور میرے خاندان کو کوئی نقصان نہ پہنچائیں۔ اس پر بابر نے ہنس کر اپنے وزیر اعظم سے کہا۔ میں تمہیں ہندوستان کی فتح کی خوشخبری دیتا ہوں کہ جہاں کے ایک عام آدمی کو اپنے وطن سے زیادہ اپنے کھیت اور اپنے خاندان میں دلچسپی ہے۔

RELATED BOOKS